Type Here to Get Search Results !

Wah Kya Joodo Karam Tazmeen Lyrics

Views 0

یہ بھی پڑھیں

Wah kya Joodo Karam Tazmeen Lyrics

جوش پر جودو سخاوت کا ہے دریا تیرا
کبھی مایوس نہیں ہوتا ہے منگتا تیرا
کون ہے جس نے نہیں پایا ہے صدقہ تیرا
واہ کیا جود و کرم ہے شہ بطحا تیرا
نہیں سنتا ہی نہیں مانگنے والا تیرا

ورفعنالک ذکرک ہے خدا کا فرمان
تیری عظمت کی گواہی لئے اترا قرآن
تجھ کو اللہ نے بخشی ہے وہ عزت و شان
آسماں خوان زمیں خوان زمانہ مہمان
صاحب خانہ لقب کس کا ہے تیرا تیرا


تو ہے محبوبِ خدا کس کا ہوا ایسا نصیب
کون ہے تیری طرح مالک و مولیٰ کے قریب
اے شہ جودو سخا صبر و صداقت کے نقیب
میں تو مالک ہی کہوں گا کہ ہو مالک کے حبیب
یعنی محبوب ومحب میں نہیں میرا تیرا


ہے سوا تیرے زمانے میں کسے سب کا خیال
گر نہ ہو چشمِ عطا تیری تو جینا ہو محال
اس لیے کہتا ہے یہ عاشق سلمان و بلال
تیرے ٹکڑوں پہ پلے غیر کی ٹھوکر پہ نہ ڈال
جھڑکیاں کھائیں کہاں چھوڑ کے صدقہ تیرا


ہر چمن آج ہے آباد جدھر کیجئے نگاہ
ہیں سبھی فرد وبشر شاد جدھر کیجئے نگاہ
ہر طرف ان کا ہے میلاد جدھر کیجئے نگاہ
حرم وطیبہ وبغداد جدھر کیجئے نگاہ
جوت پڑتی ہے تِری نور ہے چھنتا تیرا

جس کے فیضان کی چادر ہے عریض اور وسیع
جملہ پیرانِ طریقت میں ہے گوہر جو رفیع
تیری امت کے مشائخ ہیں سبھی جس کے مطیع
تیری سرکار میں لاتا ہے رؔضا اس کو شفیع
جو مِرا غوث ہے اور لاڈلا بیٹا تیرا
✰✰✰

Post a Comment

0 Comments

Top Post Ad

Below Post Ad