Type Here to Get Search Results !

Hum ko ab tak aashiqui ka woh zamana yaad hai

Views 0

Also Read

غزل 

ساتھ تیرے بیٹھ کر پڑھنا پڑھانا یاد ہے

اور تیرے عشق کا پہلا نشانہ یاد ہے


زندگی کے سارے ارماں سارے غم سب بھول کر

صرف تیری دید سے نظریں ملانا یاد ہے


جب ملا کرتے تھے ہم ڈر ڈر کے چھت پر رات دن

ہم کو اب تک عاشقی کا وہ زمانہ یاد ہے


کر کے تجھ سے بے وفائی جب جدا دونوں ہوئے

پھر تری یادوں میں دل کا پھڑ پھڑانا یاد ہے


داستان عشق رو رو کے سناتے ہو ہمیں

ایسا لگتا ہے تمہیں اپنا فسانہ یاد ہے


لوگ کہتے ہیں ہمیں افسردہ دل نا چیز ہو

اسلئے ہم کو ابھی تک دل لگانا یاد ہے


دل سے دل کی بات کہنا یہ ترا ہی کام تھا

یوں علی تیری محبت کا زمانہ یاد ہے

✍🏻محمد علی حسن 

Post a Comment

0 Comments

Top Post Ad

Below Post Ad