Type Here to Get Search Results !

husn ko chand jawani ko kanwal kehte hain lyrics

Views 0

Also Read

Unlimited Shayari Thumbnail
حسن کو چاند جوانی کو کنول کہتے ہیں
ان کی صورت نظر آئے تو غزل کہتے ہیں

اف وہ مرمر سے تراشا ہوا شفاف بدن
دیکھنے والے اسے تاج محل کہتے ہیں

وہ ترے حسن کی قیمت سے نہیں ہیں واقف
پنکھڑی کو جو ترے لب کا بدل کہتے ہیں

پڑ گئی پاؤں میں تقدیر کی زنجیر تو کیا
ہم تو اس کو بھی تری زلف کا بل کہتے ہیں

قتیل شفائی

Post a Comment

0 Comments

Top Post Ad

AD Banner

Below Post Ad

AD Banner