Type Here to Get Search Results !

Hum garibo ka wo gham gusar aa gaya lyrics | Asas Iqbal

Views 0

Also Read

Hum garibo ka wo gham gusar aa gaya lyrics

ہم غریبوں کا وہ غمگسار آ گیا
شـــاہکار آ گیا،  تـاجـــدار آ گیا
یعنی محبوب پروردگار آ گیا

پھول نے مسکرا کر چمن سے کہا
ہاں گگن سے کہا، ہاں مگن سے کہا
آج گلشن میں جـان بہار آ گیا

جس کے آگے جھُکے تاجداروں کے سر
ماہپاروں کے سر، ہاں ہزاروں کے سر
سب رسولوں کا وہ تاجدار آ گیا

جب کسی نے کہا تیرا سرور ہے کون
تیرا رہبر ہے کون، تیرا افسر ہے کون
لب پہ نامِ نبی ﷺ بار بار آ گیا

آنکھ پُرنم ہوئی دل مچلنے لگا
دل تڑپنے لگا دل سسکنے لگا
یاد جب بھی نبی کا مزار آ گیا

کفر غاروں میں منہ کو چھپانے لگا
ہاں چھپانے لگا ٹس مسانے لگا تلملانے لگا
دہر میں جب وہ ناقَہ سَوار آ گیا

جس طرف چل دیا وہ شہہ دیں ہشم
تاجدارِ حرم شہرِ یارِ ارم
نعمتیں بانٹتا بے شمار آ گیا

پھول کھلنے لگے، بھنورے گانے لگے
گنگنانے لگے، مسکرانے لگے
اے اسد کُل جہاں کا قرار آ گیا

اسدؔ اقبال

Post a Comment

0 Comments

Top Post Ad

Below Post Ad