Type Here to Get Search Results !

Roz bechain karta hi hai naat lyrics

Views 0

Also Read

Roz bechain karta hi hai naat lyrics

Roz bechain karta hi hai naat lyrics | samne seerate mustafa lyrics | Tazmeen Naat

روز بے چین کرتا ہی ہے دل کسی نہ کسی کے لیے 
جامِ عشقِ نبی ﷺ پیجیۓ قلب کی تازگی کے لیے
عمر ہرگز نہیں دوستوں نفس کی پیروی کے لیے 
سامنے سیرتِ مصطفیٰ درس ہے رہبری کے لیے 
پھر ہمیں اور کیا چاہیے دوستوں زندگی کے لیے
 
جب تلک جسم میں جان ہے چل رہا پھر رہا ہے بشر
سُوکھنا ہے مگر ایک دن شادماں زندگی کا شجر 
رو رہا ہوگا اعمال پر کچھ نہ آۓ گا تجھکو نظر 
کر یقین تو میری بات پر کیسا ہوگا اندھیرا وہ گھر 
آ ہی جائیں گے خیرالبشر قبر میں روشنی کے لیے

پہونچے جنکے قدم فرش سے، عرش اور عرش سے لامکاں 
ہے انہیں کے تصدق رواں اپنی جیون کا یہ کارواں 
آج دنیا ہے آباد ہے اپنے سپنوں کا یہ آشیاں
حشر میں ہم کہاں تم کہاں جب نہ ہوگا کوئی مہرباں 
بن کے رحمت حضور ﷺ آئیں گے اپنے ہر امتی کے لیے 

کام ایسے کرو سب کہیں آفریں آفریں آفریں
چکھنا ہے موت کا تو مزہ لازمی لازمی لازمی
بات ایک اور کر لیجیۓ خوب اچھی طرح دل نشیں 
ہاتھ آنے کو کچھ بھی نہیں بس ملےگی تو دو گز زمیں
جانے پھر کیوں پریشان ہے آدمی آدمی کے لیے

Post a Comment

0 Comments

Top Post Ad

Below Post Ad