Type Here to Get Search Results !

Islam ki Sajane Tasweer karbala mai lyrics | Habibullah Faizi

Views 0

Also Read

Islam ki Sajane Tasweer karbala mai lyrics in Urdu

Listen to the the audio file Coming Soon
اسلام کی سجانے تصویر کربلا میں
گھر بار لے کے پہنچے شبیر کربلا میں

رکھی گئی مِنا میں بنیاد جس وفا کی
اُس کی ہوئی مکمل تعمیر کربلا میں

بھائی بھتیجا بیٹا ابن علی نے دے کر
اسلام کی بچا لی توقیر کربلا میں

 نامِ حسین زندہ صبرِ حسین زندہ
یہ خون سے لکھی ہے تحریر کربلا میں

حُر نے یزیدی جاہ و حشمت پہ تھوک ڈالا
شبیر کی سنی جب تقریر کربلا میں

فرش زمین کیا ہے تھرّا اٹھا فلک بھی
ہاں ایسا بھی چَلا ہے اک تیر کربلا میں

شبیر نے اۓ فیضؔی آیاتِ جَاھِدُوں کی
بن کر دکھا ہے تفسیر کربلا میں

حبیب اللہ فیضؔی
✰✰✰

Post a Comment

0 Comments

Top Post Ad

Below Post Ad