Type Here to Get Search Results !

Uske Qadmo tale aakash ka Taara hoga Lyrics

Views 0

یہ بھی پڑھیں

 Uske Qadmo tale aakash ka Taara hoga Lyrics

Listen to the audio file
اس کے قدموں تلے آکاش کا تارا ہوگا
جس نے ایک پل بھی مدینے میں گزارا ہوگا

بیچ مجدھار میں طوفاں کو ہرایا جس نے
اس نے آقا کو یقیناً ہی پکارا ہوگا

اپنی نظروں کی زیارت میں کروں گا خود ہی
جب مجھے خواب میں دیدار تمہارا ہوگا

آرزو موت کی ہے جب سے سنا ہے میں نے
قبر میں عرش کے دولہا کا نظارہ ہوگا

میرا دعویٰ کہ رضواں سے وہ فرما دیں گے
اِس کو جانے دو یہ دیوانہ ہمارا ہوگا

قومِ نجدی کے لئے مسلک اعلی حضرت
کسی بم سے بھی زیادہ یہی نعرہ ہوگا

میرے اشکوں کا یہ بہتا ہوا دریا شاہدؔ
حشر کے دن میری بخشش کا سہارا ہوگا

شاعر اسلام جناب مرحوم شاہدؔ یوسفی صاحب قبلہ
✰✰✰

Post a Comment

0 Comments

Top Post Ad

Below Post Ad