Type Here to Get Search Results !

Chamak tujhse pate hain Tazmeen Lyrics

Views 0

یہ بھی پڑھیں

 Chamak tujhse pate hain Tazmeen Lyrics

سرِ عرش قربِ دنیٰ جانے والے
گنہگار امت کے کام آنے والے
مدینے میں آرام فرمانے والے

چمک تجھ سے پاتے ہیں سب پانے والے
مِرا دل بھی چمکا دے چمکانے والے


پڑی ہے گناہوں کی کچھ ایسی عادت
ہمیں حال پر اپنی آتی ہے غیرت
دکھائیں کسے جاکے ہم اپنی حالت

برستا نہیں دیکھ کر ابرِ رحمت
بدوں پر بھی برسا دے برسانے والے


منافق کی آنکھوں پہ پردہ ہے ہے واللہ
ہمیشہ سے دل اس کا مردہ ہے واللہ
مگر سنیوں کا عقیدہ ہے واللہ

تو زندہ ہے واللہ تو زندہ ہے واللہ
مِری چشمِ عالَم سے چھپ جانے والے

الگ ساری دنیا کے غم رکھ کے چلنا
خیالِ ادب دم بہ دم رکھ کے چلنا
نگاہوں میں شانِ حرم رکھ کے چلنا

حرم کی زمیں اور قدم رکھ کے چلنا
ارے سر کا موقع ہے او جانے والے


بزرگوں کے پاکیزہ ناموں سے الجھیں
اساطین امت کے کاموں سے الجھیں
قصائد سے الجھیں کلاموں سے الجھیں

تِرا کھائیں تیرے غلاموں سے اُلجھیں
ہیں منکر عجب کھانے غُرّانے والے


سدا ان کی یادوں کی محفل سجانا
محبت کے انمول گوہر لٹانا
رضا کا یہ مقطع بھی پڑھ کے سنانا

رضاؔ نفس دشمن ہے دم میں نہ آنا
کہاں تم نے دیکھے ہیں چندرانے والے


تضمین نگار:- شاعرِ اسلام مولانا محبوب گوہر اسلام پوری صاحب
✰✰✰

Post a Comment

0 Comments

Top Post Ad

Below Post Ad