Type Here to Get Search Results !

Dil Ko Unse Khuda Juda Na Kare Tazmeen Lyrics

Views 0

یہ بھی پڑھیں

 Dil Ko Unse Khuda Juda Na Kare Tazmeen Lyrics

خالی مدحت سے لب رہا نہ کرے
یادِ احمد سے دل ہٹا نہ کرے
بندہ رب سے یہ کیوں دعا نہ کرے

دل کو اُن سے خدا جدا نہ کرے
بے کسی لوٹ لے خدا نہ کرے


نذرِ دیمک ہے زندگی کی کتاب
ہے مرض کی وجہ سے حال خراب
جانے کب برسے گا شفا کا سحاب

سب طبیبوں نے دے دیا ہے جواب
آہ عیسیٰ اگر دوا نہ کرے


ہے خیالوں میں ان کی یاد کا نور
دل کو ملتا ہے جس سے کیف و سرور
ذہن و دل کو دیا ہے جس نے شعور

دل میں روشن ہے شمعِ عشقِ حضور
کاش جوشِ ہوس ہوا نہ کرے


ان کا کوچہ ہے آخری منزل
بحرِ غم میں وہی ہے اک ساحل
دافع رنج امن کا حامل

ضعف مانا مگر یہ ظالم دل
ان کے رستے میں تو تھکا نہ کرے


آس تو ہے درِ کرم سے مجھے
سب ملے گا شہ امم سے مجھے
دور رہنا ہے رنج و غم سے مجھے

دل کہاں لے چلا حرم سے مجھے
ارے تیرا برا خدا نہ کرے


چومنے ان کے در کے زینے کو
لوٹنے قیمتی خزینے کو
دینے گوہر سرور سینےاکو

لے رضاؔ سب چلے مدینے کو
میں نہ جاؤں ارے خدا نہ کرے


تضمین نگار:- شاعرِ اسلام مولانا محبوب گوہر اسلام پوری صاحب
✰✰✰

Post a Comment

0 Comments

Top Post Ad

Below Post Ad