Type Here to Get Search Results !

Wo Aala mai hu Past Past | Habibullah Faizi

Views 0

Also Read

Wo Aala mai hu Past Past | Habibullah Faizi | Naat Lyrics in Urdu

Wo Aala mai hu Past Past Lyrics in Urdu

Listen to the the audio file
وہ اعلی میں ہوں پست پست، وہ اعلی میں ہوں پست
ہے بحرِ کرم میں جوش جوش، امت کو ہے یہ ہوش ہوش
وہ آقا سب کی خطا پوش، غیبی ہے ان کے دست دست

وہ اعلی میں ہوں پست پست، وہ اعلی میں ہوں پست

وہ باطن و ظاہر محبوبِ خالق، وہ اول و آخر ہر شئے پہ فائق
قاسم ہے ان کا نام نام، ہے بانٹنا ان کا کام کام
مجبور ہوئے ہیں تھام تھام، ناکام ہوں میں کمبخت بخت

وہ اعلی میں ہوں پست پست، وہ اعلی میں ہوں پست

سب لوگ ہیں کھاتے رحمت کے نوالے، ہے ان کے کرم سے ہر سمت اجالے
نہیں ان سے کوئی دور دور، ہر شئے پہ ان کا نور نور
انسان ملائک حور حور، پڑھے صل علی ہر وقت وقت

وہ اعلی میں ہوں پست پست، وہ اعلی میں ہوں پست

رحمت کا دسترخوان انہیں کا، ہر خلق پہ ہے احسان انہیں کا
نعلینِ نبی کا تاج تاج، ہو فیضی عطاء جو آج آج
رکھ لیں وہ ہماری لاج لاج، نہیں چاہی تاج و تخت تخت

وہ اعلی میں ہوں پست پست وہ اعلی میں ہوں پست

حبیب اللہ فیؔضی
✰✰✰

Post a Comment

0 Comments

Top Post Ad

Below Post Ad