Type Here to Get Search Results !

Jaane Rahmat ko jab Ayyub ne ghar me Rakha Lyrics

Views 0

یہ بھی پڑھیں

Jaane Rahmat ko jab Ayyub ne ghar me Rakha Lyrics in Urdu

Listen to the audio file
جانِ رحمت کو جب ایوب نے گھر میں رکھا
میرے آقا نے انہیں اپنے جگر میں رکھا

عمر بھر تم نے جو کچھ مال کمایا صدیق
راہِ مولیٰ میں خوشی سے وہ لٹایا صدیق
پوچھا آقا نے کہ کچھ گھر میں بھی چھوڑا صدیق
بولے اللہ کی رحمت کو ہی گھر میں رکھا

پتے پتے کو ہر ایک بات یہ بتلانی تھی
ٹہنی ٹہنی کو تیری شان یہ دکھلانی تھی
تیری تعظیم درختوں سے بھی کروانی تھی
اسلیے رب نے شَعور اتنا شجر میں رکھا

عشق جس دل میں نہیں اُن کا وہ مومن ہی نہیں
ان کے جیسا تو جہاں میں کوئی محسن ہی نہیں
ان کی تعریف میں کر پاؤں یہ ممکن ہی نہیں
جن کی انگلی کا نشاں رب نے قمر میں رکھا

کون کہتا ہے کہ نعمت یہ سبھی کو دی ہے
حق پہ مرنے کی تمیز زندہ دلی کو دی ہے
رب نے ایمان کی دولت بھی اسی کو دی ہے
شاہِ بطحا نے جسے اپنی نظر میں رکھا

شاعر اسلام مرحوم جناب سجادؔ نظامی صاحب
✰✰✰

Jaane Rahmat ko jab Ayyub ne ghar me Rakha Lyrics in Hindi

Coming Soon

मरहूम सज्जाद निज़ामी साहब
✰✰✰

Jaane Rahmat ko jab Ayyub ne ghar me Rakha Lyrics in English

Coming Soon

Marhoom Sajjad Nizami Sahab
✰✰✰

Post a Comment

0 Comments

Top Post Ad

Below Post Ad