Type Here to Get Search Results !

Hum use yaad bahut aayenge Urdu Ghazal Qateel Shifai

Views 0

Also Read

مرحلہ رات کا جب آئے گا
جسم سائے کو ترس جائے گا

چل پڑی رسم جو کج فہمی کی
بات کیا پھر کوئی کر پائے گا

سچ سے کترائے اگر لوگ یہاں
لفظ مفہوم سے کترائے گا

اعتبار اس کا ہمیشہ کرنا
وہ تو جھوٹی بھی قسم کھائے گا

تو نہ ہوگی تو پھر اے شام فراق
کون آ کر ہمیں بہلائے گا

ہم اسے یاد بہت آئیں گے
جب اسے بھی کوئی ٹھکرائے گا

کائنات اس کی مری ذات میں ہے
مجھ کو کھو کر وہ کسے پائے گا

نہ رہے جب وہ بھلے دن بھی قتیلؔ
یہ زمانہ بھی گزر جائے گا

قتیؔل شفائی 

Post a Comment

0 Comments

Top Post Ad

Below Post Ad